افریقی ملک کیمرون کے شمالی علاقے میں دہشت گردوں کے حملے میں 11 ھلاک

  • IMG_20180609_173809.jpg

افریقی ملک کیمرون کے شمالی علاقے میں دہشت گردوں کے حملے میں ضلعی سربراہ سمیت 6 شہری جاں بحق ہوئے جبکہ جوابی کارروائی میں 5 حملہ آروں کو بھی مارا گیا۔

مقامی انتظامیہ کے سربراہ عبداللہ یرمی باکاری کا کہنا تھا کہ مانگیو کے علاقے میں حملہ نائیجیریا کی دہشت گرد تنظیم بوکو حرام کی جانب سے کیا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘حملہ آوروں نے ضلعی سربراہ کے گھر کو نشانہ بنایا جہاں وہ گولی لگنے سے جاں بحق ہوئے اور ان کے ساتھ عمارت میں موجود دو دیگر افراد بھی موقع پر جاں بحق ہوگئے’۔

عبداللہ کا کہنا تھا کہ فائرنگ کی آواز سن کر جب پڑوسی اپنے گھروں سے باہر نکل کر جائے وقوع کی طرف بڑھے تو حملہ آوروں نے انھیں بھی نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں مزید تین افراد جاں بحق ہوئے۔

مقامی سیکیورٹی گروپ اور سیکیورٹی فورسز نے دہشت گردوں کا پیچھا کرتے ہوئے 5 حملہ آوروں کو ہلاک کردیا اور 3 زخمی ہوگئے.

خیال رہے کہ دہشت گرد تنظیم بوکو حرام نے 2009 میں نائجیریا میں مسلح کارروائیوں کا آغاز کردیا تھا اور ایک اندازے کے مطابق 20 ہزار کے قریب افراد ان کی کارروائیوں کا نشانہ بن چکے ہیں۔

بوکوحرام کی کارروائیاں نہ صرف نائیجیریا تک محدود رہی ہیں بلکہ پڑوسی ملک کیمرون بھی اس کی لپیٹ میں رہا ہے۔

عالمی تجزیاتی ادارے انٹرنیشنل کرائسس گروپ (آئی سی جی) کے مطابق دہشت گرد تنظیم نے 2014 سے تاحال کیمرون میں اپنی مسلح کارروائیوں میں 2 ہزار شہری اور فوجیوں کو ہلاک کردیا جبکہ ایک ہزار کے قریب افراد کو اغوا بھی کیا جاچکا ہے۔

خیال رہے کہ کیمرون اپنے پڑوسی ممالک چاڈ اور نائیجر کے ساتھ مل کر نائیجیریا سے دہشت گردی کے خاتمے کے لیے مشترکہ فوجی کارروائیاں کررہا ہے۔

Comments

comments