مشیرخزانہ بلوچستان ڈاکٹررقیہ ہاشمی اپنے عہدے سے مستعفی ہوگئیں

مشیرخزانہ بلوچستان ڈاکٹررقیہ ہاشمی اپنے عہدے سے مستعفی ہوگئیں ،ذرائع کے مطابق ڈاکٹررقیہ ہاشمی نے اپنا استعفیٰ گورنر بلوچستان کو روانہ کر دیا ہے۔

ڈاکٹررقیہ ہاشمی نے14مئی کو بلوچستان اسمبلی میں بجٹ پیش کیا تھا ،اسمبلی میں بجٹ پر بحث جاری تھی جس میں اراکین اسمبلی کی جانب سے خراب رویہ اختیار کیا گیا جبکہ اورڈاکٹر رقیہ ہاشمی کے بقول نا مناسب الفاظ استعما ل کئے گئے جس پر احتجاجاً مستعفی ہونا چاہتی ہوں۔

ڈاکٹر رقیہ نے اپنا استعفیٰ گورنر بلوچستان کو بھجوادیاہے جس پر18مئی کی تاریخ درج ہے،ذرائع کے مطابق وزیر اعلیٰ بلوچستا ن کی طرف سے ڈاکٹر رقیہ کو منانے کی کوششیں کی گئیں تاہم ڈاکٹر رقیہ اپنا استعفیٰ واپس لینے پر رضا مند نہیں ہو ئیں۔
مشیر خزانہ بلوچستان رقیہ ہاشمی نے ساتھی اراکین کے ناروا رویے کے خلاف عہدے سے استعفادے دیا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق 14مئی کو بجٹ پیش کرنے کی تقریر کے دوران ساتھی اراکین کی جانب سے نازیبا الفاظ استعمال کرنے پر مشیر خزانہ نے احتجاجا مستعفی ہونے کا فیصلہ کیا تھا۔ مشیر خزانہ رقیہ ہاشمی نے اپنا استعفا وزیراعلی بلوچستان کو ارسال کردیا ہے جس پر 18مئی کی تاریخ درج ہے، یہ استعفا بجٹ پیش کرنے کے 4 روز بعد پیش کیا گیا ہے ،اس سے قبل انہیں منانے کی کوششیں بھی کی گئیں تاہم ان کا کہنا تھا کہ وہ عہدے سے زیادہ اپنی عزت کو مقدم رکھتی ہیں ۔مشیر خزانہ کا استعفا وزیراعلی بلوچستان کو موصول ہوچکا ہے جس کی منظوری کے حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا۔واضح رہے کہ ڈاکٹر رقیہ ہاشمی وہ پہلی خاتون ہیں جنہوں نے رواں ماہ 14 مئی کو بلوچستان کا بجٹ پیش کیا تھا۔

Comments

comments