گھر میں تین کم عمر بچوں کو گلا دبا کر قتل کر دیا گیا ماں صوفے پر بیٹھی تھی اور اس کی کلائی پر بلیڈ کے زخموں کے نشان ہیں بچوں کو ماں نے ہی قتل کیا ہے اور وہ ذہنی مریضہ لگتی ہے، اہل خانہ سے تفتیش شروع کر دی ہے، پولیس

  • 1126451-image-1521870073.jpg

لاہور کے علاقہ بیدیاں روڈ پر ایک گھر میں تین کم عمر بچوں کو گلا دبا کر قتل کر دیا گیا ۔ جبکہ پولیس نے اہل خانہ سے تفتیش شروع کر دی ہے جبکہ بچوں کی والدہ نے قتل کا الزام اپنے دوست پر لگایا ہے ۔ انیقہ نامی خاتون نے اپنے والد کو فون کیا جس کے pبعد خاتون کے والد نے پولیس کو اطلاع دی جس کے بعد پولیس جائے وقوعہ پر پہنچ گئی اور دیکھا کہ تین بچوں زین العابدین ، کنیز فاطمہ اور ابراہیم کی نعشیں بیڈ پر پڑی ہیں جبکہ ماں صوفے پر بیٹھی تھی اور اس کی کلائی پر بلیڈ کے زخموں کے نشان ہیں ۔ پولیس کے مطابق بچوں کو ماں نے ہی قتل کیا ہے اور وہ ذہنی مریضہ لگتی ہے ۔ پولیس واقعہ کی مزید تفتیش کر رہی ہے اور نعشوں کو پوسٹ مارٹم کے لیے ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے ۔

لاہور: ہیر کے علاقے میں ایک گھر سے تین بچوں کی لاشیں برآمد ہوئی ہیں جنہیں گلا دبا کر قتل کیا گیا ہے۔

لاہور کے علاقے ہیر میں ایک گھر میں تین بچوں کو قتل کردیا گیا ہے۔ مقتولین میں 10 سالہ زین، 6 سالہ کنیز فاطمہ اور 4 سالہ ابراہیم شامل ہیں۔ اس لرزہ خیز کے وقت گھر میں ان کی ماں موجود تھی اور مبینہ طور پر اسی نے بچوں کو قتل کیا ہے۔

واقعے کی اطلاع ملتے ہی پولیس جائے وقوعہ پر پہنچی تو بچوں کی لاشیں ملیں اور ان کی ماں زخمی حالت میں تھی۔ ابتدائی تفتیش میں پتہ چلا ہے کہ تینوں بچوں کو گلا دبا کر جان سے مارا گیا۔ خاتون کے بارے میں پتہ چلا کہ وہ مطلقہ ہے اور اس نے قتل کا الزام اپنے کسی دوست پر عائد کیا۔ تاہم پولیس کے مطابق ماں ذہنی مریضہ معلوم ہوتی ہے اور اسی نے مبینہ طور پر اپنے بچوں کو مارا ہے۔ پولیس نے بتایا کہ یہ گھر قیصر امین باجوہ نامی شخص کی ملکیت ہے جو گھر میں موجود نہیں ہے۔ واقعے کی مزید تحقیقات شروع کردی گئی ہیں۔

واضح رہے کہ پولیس نے قتل کے الزام میں بچوں کی والدہ کو گرفتار کرلیا ہے۔

Comments

comments