جوزف بائیڈن امریکہ کے 46 ویں صدر بن گئے،عہدے کا حلف اٹھا لیا

  • IMG_20210121_022457.jpg

امریکی صدر جوزف بائیڈن نے 46 ویں امریکی صدر کا حلف اٹھا لیا۔تفصیلات کے مطابق امریکا میں الیکشن جیتنے والے جوزف بائیڈن کی تقریب حلف برداری ہوئی، سب سے پہلے نائب امریکی صدر کملا ہیرس سے جسٹس سونیا سٹومئیر نے حلف لیا، جو بائیڈن سے سپریم کورٹ کے چیف جسٹس جون رابرٹس حلف لیا جبکہ لیڈی گاگا اور جنیر لوپز نے پرفارم کیا۔تقریب میں سابق صدر جارج بش، باراک اوباما، بل کلنٹن، سابق وزیر خارجہ ہیلری کلنٹن، مائیک پینس، پاکستانی سفیر اسد مجید نے شرکت کی۔ اس موقع پر سخت سکیورٹی کے اقدامات کیے گئے تھے

اب تمہارا وقت ہے اور میری تمام تر نیک خواہشات تمہارے ساتھ ہیں۔ ان الفاظ کا استعمال امریکہ کے نو منتخب صدر جو بائیڈن کو تقریب حلف برداری سے قبل مبارکباد دیتے ہوئے سابق امریکی صدر بارک اوبامہ نے استعمال کیے ہیں۔سابق امریکی صدر بارک اوبامہ کے دور میں نو منتخب صدر جوبائیڈن نائب صدر کے منصب پہ فائز تھے۔بارک اوبامہ نے اپنی نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے ایک تاریخی تصویر بھی شیئر کی ہے جس میں دونوں نے دروازے نکلتے ہوئے ایک دوسرے کی پیٹھ پر ہاتھ رکھا ہوا ہے

امریکہ میں نومنتخب نائب صدر کملا ہیرس نے اپنے عہدے کا حلف اٹھا لیا ہے۔کیلیفورنیا سے تعلق رکھنے والی 55 سالہ ڈیموکریٹ سینیٹر ڈیموکریٹ پارٹی کے صدارتی امیدوار بننے کی دوڑ میں جو بائیڈن کے مخالف تھیں تاہم بائیڈن نے اپنے انتخاب کے بعد کملا کو اپنے نائب کے طور پر چن لیا تھا۔کملا ہیرس صرف پہلی خاتون نائب صدر ہی نہیں بلکہ ان کے والدین کے جمیکا اور انڈیا سے تعلق کی وجہ سے وہ پہلی غیرسفید فام شخصیت بھی ہیں جو امریکہ کی نائب صدر بن رہی ہیں۔کملا ہیرس کی والدہ انڈیا جبکہ والد جمیکا میں پیدا ہوئے تھے۔وہ ریاست کیلی فورنیا کی سابق اٹارنی جنرل بھی رہ چکی ہیں اور وہ نسلی تعصب کے خلاف ہونے والے مظاہروں کے دوران پولیس کے نظام میں اصلاحات کی بھی حامی رہی ہیں۔

Comments

comments