سندھ ہائی کورٹ نیب زدہ افسران کے خلاف کاروائی 435 میں 55 ملازمین کو سخت سزائیں دی گئی ہیں ،

سندھ ہائی کورٹ

سندھ میں نیب زدہ افسران کے خلاف کی گئی کاروائی کی تفصیلات نے حاصل کرلی

سندھ حکومت نے 435 ملازمین کے خلاف کاروائی کی رپورٹ عدالت میں جمع کرادی

مختلف محکموں کے 55 ملازمین کو سخت سزائیں دی گئی ہیں ،رپورٹ

مختلف محکموں کے دس ملازمین کو جبری ریٹائر جبکہ 29 کو برطرف کردیا گیا ہے ،رپورٹ

بارہ ملازمین کی تنزلی کی گئی ہے ،سندھ حکومت کی رپورٹ

مختلف محکموں کے 238 ملازمین کے خلاف کاروائی جاری ہے،رپورٹ

مختلف محکموں کے 27 ملازم عدالتی فیصلے سے قبل ریٹائرڈ اور 8 انتقال کر گئے ہیں ،رپورٹ

سندھ حکومت کی رپورٹ کے مطابق 73 ملازمین کے انکریمنٹ بند کردئیے ہیں،رپورٹ

سابق ڈسٹرکٹ ریونیو آفیسر سہیل ادیب بچانی کی پانچ سال کے لئے تنزلی کی گئی ہے رپورٹ

سندھ حکومت کی جانب سے سیکریٹری خزانہ حسن نقوی کے خلاف کاروائی سے معذرت کرلی گئی

حسن نقوی نے ہائی کورٹ کے 2018 کے فیصلے کو چیلنج کیا تھا ،سندھ حکومت

حسن نقوی وفاقی ادارے اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کے ماتحت ہیں،سندھ حکومت

حسن نقوی کے خلاف وفاقی حکومت ہی کاروائی کرسکتی ہے ،رپورٹ

فوڈ ڈیپارٹمنٹ کے وی آر کرنے والے 16 ملازمین کو برطرف کردیا گیا ہے رپورٹ

محکمہ آبپاشی کے 22 افسراں نے وی آر کی ہے کاروائی سے پہلے 6 ریٹائرڈ ہوچکے رپورٹ

محکمہ خوارک کے دو افسراں کو جبری ریٹائرڈ کیا گیا ہے ایک انتقال کرگیاہے 8 ریٹائرڈ ہوچکے ہیں کاروائی سے پہلے ،رپورٹ

محکمہ زراعت میں سے گیارہ ملازمین میں سے پانچ کو برطرف اور ایک کو جبری ریٹائرڈ کیا گیا ہے رپورٹ

محکمہ وائلڈ لائف کے سابق کنزرویٹو غلام قادر کی سالانہ انکریمنٹ روک کر تبادلہ کر دیا گیا ہے رپورٹ

سابق رینج فارسٹ آفیسر جان محمد سومرو کی پانچ سال کے لئے تنزلی کی گئی ہے رپورٹ

محکمہ سروسز کے 18 گریڈ کے آفیسر محبوب اور احسان جمالی کی خدمات وفاق کو واپس کردی گئی ہیں،رپورٹ

پبلک ہیلتھ انجئیرنگ ڈیپارٹمنٹ کے 6 ملازمین میں سے ایک ریٹائرڈ ہوگیا ہے دیگر کی سالانہ انکریمنٹ روک دی گئی ہے رپورٹ

محکمہ صحت کے 6 ملازمین میں سے پانچ ریٹائڑد ہوچکے ہیں رپورٹ

Comments

comments