بجلی کے ملک گیر بریک ڈاون کی انکوائری مکمل ہوگئی، فرانزک چھان بین میں قصور وار افسران

*بجلی کے ملک گیر بریک ڈاون کی انکوائری مکمل ہوگئی، فرانزک چھان بین میں قصور وار افسران*

*بجلی کے ملک گیر بریک ڈاون کی انکوائری مکمل ہوگئی،*

*فرانزک چھان بین میں افسران کو قصور وار ٹھرایا گیا*

*غفلت برتنے پر 600 میگا واٹ گدو پاور پلانٹ کے ڈپٹی ڈائریکٹر الیکٹریکل سوئچ یارڈ فائق حسین شاہ کو معطل کردیا گیا۔*

*پچھلی حکومت کے دوران جب نیا پاکستان نہیں بنا تھا اور تبدیلی نہیں آئی تھی تو ہر چیز کا ذمہ دار اس وقت کے حکمران ہوتے تھے اور عمران خان صاحب استعفی مانگنے پہنچ جاتے تھے*
*یورپ کی مثال دے کے کہتے تھے کہ اگر وہاں پر کوئی ریلوے حادثہ پیش آتا ہے تو وزیر استعفی دے کر گھر چلا جاتا ہے*

*عمران خان صاحب شمالی کوریا میں کشتی ڈوبنے کا واقعہ بڑا سناتے تھے کہ سمندر میں کشتی ڈوب گئی اور وزیراعظم کا اس سے تعلق بھی نہیں تھا لیکن اس میں غیرت تھی اور استعفی دے کے گھر چلا گیا*

*پرانے پاکستان میں جب کسی مقتول کا قاتل نہیں ملتا تھا تو ذمہ دار ریاست ہوتی تھی*

*لیکن جب سے نیا پاکستان بنا ہے تبدیلی آئی ہے تو یہ سارے پیمانے تبدیل ہوچکے ہیں*

*کراچی میں طیارہ کو حادثہ پیش آتا ہے سو کے قریب لوگ اپنی جان سے چلے جاتے ہیں ذمہ دار پائلٹ ہوتے ہیں*
*اسی پر وزیر ہوا بازی تقریر کرتے ہوئے پوری پی آئی اے اور محکمہ ہوا بازی کا بیڑا غرق کردیتے ہیں*

*ریلوے میں ایک سو بیس کے قریب چھوٹے بڑے حادثے ہوتے ہیں ستر بندے زندہ جل کر خاکستر ہو جاتے ہیں لیکن ذمہ دار مسافر اور ٹرین کا عملہ ہوتا ہے*

*پرانے پاکستان میں مہنگائی بیروزگاری کی ذمہ دار حکومت ہوتی ہے اور وزیراعظم سے استعفیٰ مانگا جاتا ہے لیکن نئے پاکستان میں پیمانے چینج ہیں اور اب اس وقت نہ ہی کسی وزیر میں اور نہ وزیراعظم غیرت ہے کہ وہ ناکامی کا ذمہ اپنے سر لے کبھی مسافروں پر اور کبھی افسران پر ذمہ داری ڈال کر اپنی جان چھڑا لی جاتی ہے اور یہ کہا جاتا ہے کہ ہمیں عوام ہی اچھی نہیں ملی*

*پرانے پاکستان میں مہنگائی اور غربت کی ذمہ دار چور حکومت ہوتی ہے لیکن اب مہنگائی انتہا پر ہے بے روزگاری عام ہیں اور غربت کی سطح میں پہلے سے اضافہ ہوگیا ہے اور مزید دو کروڑ لوگ غربت کی سطح سے نیچے چلے گے لیکن حکومت اور وزیراعظم ایماندار اور ہینڈسم ہیں*

*پرانے پاکستان میں عوام کو سہولیات اور سکون کی زندگی دینا حکومت کی ذمہ داری تھی لیکن نئے پاکستان میں وزیراعظم عمران خان کہتے ہیں کہ سکون کی زندگی تو قبر میں ہی ہے*

Comments

comments