پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے پسندیدہ اور راند درگاہ اینکروں کی لسٹ جاری ہونے کے بعد ڈائریکٹر جنرل آئی ایس پی آر منیجر جنرل بابر افتخار نے اینکر معید پیرزادہ کی ویب سائٹ گلوبل ویلج سپیس کو انٹرویو

  • PhotoGrid_Plus_1607003802984.jpg

پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے پسندیدہ اور راند درگاہ سینکڑوں کی لسٹ جاری ہونے کے بعد ڈائریکٹر جنرل آئی ایس پی آر منیجر جنرل بابر افتخار نے اینکر معید پیرزادہ کی ویب سائٹ گلوبل ویلج سپیس کو انٹرویو دیا ہے انہوں نے کسی پاکستانی ویب سائٹ کو انٹرویو دے کر پاکستان میں ڈیجیٹل میڈیا کی حوصلہ افزائی کی ہے
گلوبل ویلج سپیس کے نام سے معید پیرزادہ ایک میگزین بھی چلارہے ہیں جس کی ایڈیٹر ان کی اہلیہ ہیں
ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار کا گلوبل ویلیج اسپیس  کے معید پیرزادہ کو اہم انٹرویو دیا جس  میں  بھارتی ریاستی دہشت گردی کے خلاف ڈوزیئر کے اہم نکات اجاگر کر دیئے 

لائن آف کنٹرول کی صورتحال، سی پیک، ففتھ جنریشن وار فیئر سے متعلق سوالات پر بھی  تفصیلی گفتگو کی
ویب سائٹ کے سوال کہ آپ اوروزیر خارجہ کی ڈوزیئر سے متعلق پریس کانفرنس کا عالمی برادری نے اب تک کیا ردعمل دیامیجر جنرل بابر افتخار نے کہا کہ بھارت 5 اگست  2019 کے اقدام کے بعد سے ہی عالمی سطح پر کمزور پوزیشن پر ہے۔
ڈوزیئر سامنے آنے کے بعد پاکستان کا دیرینہ موقف عالمی برادری پر ثابت ہوا ہے۔  پاکستان دہشت گردی میں بھارت کے ملوث ہونے، انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں جیسے ایشوز پر جو کچھ کہتا رہا، ڈوزیئر میں ثبوت سامنے لایا۔ میجر جنرل بابر افتخار کا مزید کہنا تھا کہ بھارتی ریاستی دہشت گردی کے ثبوتوں کو عالمی برادری نے بہت سیئریس لیا ہے۔ میجر جنرل بابر افتخار نے کہا کہ ڈوزیئر سامنے آنے کے بعد دنیا اب بھارتی اسپانسرڈ دہشت گردی پر کھل کر بات کر رہی ہے۔ بھارتی تمام تر کوششوں کے باوجود عالمی فورمز اور ذرائع ابلاغ پر بحث چل نکلی ہے۔
فارن آفس نے ڈوزیئر کو پی فائیو میں پیش کیا، پھر اقوام متحدہ سیکرٹری جنرل کو پیش کیا گیا۔
اب آپ نے دیکھا او آئی سی فورم سے تازہ ترین اعلامیہ سامنے آیا۔
ہم یہاں رکیں گے نہیں، عالمی سطح پر اس سنگین معاملے کو مزید آگے لے جائیں گے۔

Comments

comments