آل پارٹیز کانفرنس میں حکومت کے خلاف لانگ مارچ کا بڑا فیصلہ سامنے آگیا، ذرائع

  • 9D52A84B-7731-45B3-83F9-F3A9671F3264.jpeg

آل پارٹیز کانفرنس میں حکومت کے خلاف لانگ مارچ کا بڑا فیصلہ سامنے آگیا، ذرائع

‏حکومت کے خلاف لانگ مارچ جنوری میں کیا جائے گا، اے پی سی میں اتفاق، ذرائع

‏لانگ مارچ سے قبل ملک کے چاروں صوبوں میں حکومت کے خلاف ریلیاں اور جلسے ہوں گے، اے پی سی میں اتفاق، ذرائع

کل جماعتی کانفرنس نے ایکشن پلان ترتیب دے دیا

‏آل پارٹیز کانفرنس کا وزیراعظم عمران خان سے فوری مستعفی ہونے کا مطالبہ۔

‏متحدہ اپوزیشن کا ملک گیر احتجاجی تحریک کا اعلان۔

‏وکلا تاجر کسان ، عوام اور سول سوسائٹی کو اس تحریک میں شامل کیا جائے گا۔

پہلے مرحلے میں اکتوبر میں چاروں صوبوں میں مشترکہ جلسے اور ریلیاں منعقد کرنے کا فیصلہ۔

‏دوسرے مرحلہ میں دسمبر سے بڑے احتجاجی مظاھرے اور ملک گیر احتجاج کیا جائے گا۔

‏اپوزیشن جماعتوں کا جنوری دو ہزار اکیس میں اسلام آباد کی طرف فیصلہ کن لانگ مارچ کا فیصلہ۔
سلیکٹڈ حکومت کی تبدیلی کے لئے پارلیمنٹ کے اندر اور باھر تمام آپشنز استعمال کئے جائیں گے۔

‏ان آپشنز میں عدم اعتماد کی تحاریک اور اسمبلیوں سے اجتماعی استعفے بھی شامل ہیں۔
ایے پی سی
وزیر اعظم سے استعفے کا مطالبہ
جنوری تک نئے انتخابات کا اعلان کیا جائے
اسلام آباد تک ہر صوبے سے لانگ مارچ کا اعلان
پاکستان میں جمہوریت مخالف واقعات کی تحقیقات کے لئے سچ و مفاہمت کمیشن کے قیام کی تجویز
اکتوبر سے حکومت کے خلاف تحریک شروع کی جائے گی
تحریک عدم اعتماد کا آپشن بند نا کرنے کا فیصلہ
اسمبلیوں سے استعفے دینے پر مولانا فضل الرحمن کا اصرار
تقریر براہ راست نشر نا ہونے پر مولانا کا احتجاج
اے پی سی کو باقاعدہ تنظیم کی شکل دینے کی تجویز

Comments

comments