کراچی پولیس نے خاتون اریبہ کے قتل کا مقدمہ درج کرلیا۔شوہر شمشاد اور اس کے دوست سعید کو نامزد کیا گیا

  • FB_IMG_1599571658793.jpg

کراچی پولیس نے محمودآباد میں خاتون اریبہ کے قتل کامقدمہ درج کرلیا، جس میں گرفتار شوہر شمشاداوراس کے دوست کو نامزد کیا گیا ہے، جو پولیس کی زیر حراست ہیں۔تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے محمود آباد میں خاتون کی پرسرار موت کے بعد بلوچ کالونی پولیس نے خاتون اریبہ کے قتل کا مقدمہ درج کرلیا،والدہ کی مدعیت میں درج مقدمے میں شوہر شمشاد اور اس کے دوست سعید کو نامزد کیا گیا ہے۔والدہ کا کہنا ہے کہ 3ماہ پہلے شمشاد سے بیٹی کی دوسری شادی کی مخالف تھی ، میرا داماد اچھے کردار کا مالک نہیں تھا،اطلاع ملنے پرگئی تو بیٹی کی لاش بیڈ پر تھی، بیٹی کی گردن اورجسم پرزخموں کے نشانات تھے، بیٹی کو داماد اور اسکے دوست نے قتل کیا۔پولیس کے مطابق خود کشی کی اطلاع پر پہنچے توحالات واقعات کچھ اور بتا رہے تھے ، شوہرشمشاد کی گرن پرنشانات تھے پوچھنے پروہ کچھ نہیں بتاسکا ، بیڈ اور پنکھے کے درمیان اتنا فاصلہ نہیں تھا کہ کوئی خود کشی کرسکے۔پولیس نے گھر کی تلاشی کے دوران پھندا برآمد کرلیا جبکہ گھر سے شراب کی ثابت اور ٹوٹی ہوئی بوتلیں بھی ملی ہے۔پولیس حکام کے مطابق محمود آباد کے علاقے میں اریبہ نامی خاتون کی پھندا لگی لاش ملی ابتدائی طور پرواقعہ کو خودکشی بتایا گیا تاہم واقعاتی شواہد اور مرنے والی خاتون اریبہ کے والدین کے الزامات کے بعد اریبہ کے شوہرشمشاداور اس کے دوست سعد کوحراست میں لیکر پوچھ گچھ شروع کردی اور لاش کو پوسٹ مارٹم کیلئے جناح اسپتال منتقل کیا گیا۔پوسٹ مارٹم کرنے والی خاتون ایم ایل او جناح اسپتال ڈاکٹر زکیہ نے بتایا کہ خاتون کا پوسٹ مارٹم مکمل کرلیا گیا ہے متوفیہ کے جسم پر تشدد کے پرانے نشانات موجود تھے لیکن جسم پرتشدد کے تازہ نشانات نہیں پائے گئے۔ڈاکٹر زکیہ کا کہنا تھا کہ واقعہ خودکشی ہے یا قتل کہنا قبل از وقت ہے کیمیکل ایگزامن کے لئے نمونے حاصل کرلئے ہیں جس کی رپورٹ چوبیس گھنٹوں بعد موصول ہوگی ، رپورٹ آنے کے بعد خودکشی یا قتل کا فیصلہ ہوسکے گا۔بعد ازاں ضابطے کی کاروائی کے بعد خاتون کی لاش ورثا کے حوالے کردی گئی۔اریبہ کے والدین نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ ان کی بیٹی کو قتل کرکے قتل کو خودکشی کا رنگ دینے کی کوشش کی گئی اریبہ کے شوہر نے اطلاع دی کی اریبہ کی طبعیت خراب ہے آپ لوگ آجائیں، ہمارے گھر پہنچنے تک مرنے کی اطلاع نہیں تھی جب گھر پہنچے تو اریبہ کی لاش بیڈ پر رکھی تھی۔والدین کا کہنا تھا کہ بیٹی نے گزشتہ روز حلوہ کھانے کی خواہش کا اظہار کیا تھا، میری بیٹی خودکشی نہیں کرسکتی ہمارا مطالبہ ہے کہ ہمیں انصاف فراہم کیا جائے۔

شہر قائد میں ایک اور نوجوان لڑکی نے مبینہ طور پر خودکشی کر لی

اریبہ نے پہلے شوہر سے طلاق لے کر چند ماہ قبل دوسری شادی کی تھی،والدہ نے قتل کا شبہ ظاہر کر دیا

کراچی میں خودکشی کا ایک اور پر اسرار واقعہ پیش آیا ہے۔محمود آباد میں خودکشی کے پراسرار واقعے میں گھر سے خاتون کی گلے میں پھندا لگی لاش ملی جب کہ پولیس نے موقع پر پہنچ کر لاش قبضے میں لے لی۔پولیس کا کہنا ہے کہ مبینہ طور پر خودکشی کرنے والی لڑکی کا نام اریبہ ہے جس کی چند ماہ قبل ہی شادی ہوئی تھی۔

متوفیہ کے گلے میں دوپٹے کا پھندا لگا ہوا تھا تاہم جائے وقوعہ کا معائنہ کر کے پولیس نے شواہد قبضے میں لے کر شک کی بنا پر متوفیہ کے شوہر شمشاد اور دوست سعد کو پچھ گچھ کے لیے حراست میں لے لیا ہے۔انہوں نے بتایا کہ متوفیہ کے جسم پر نیل پڑے ہوئے ہیں۔تحقیقات کے دوران متوفیہ کے شوہر کی گردن پر ناخن لگنے سے آنے والی خراشیں بھی پائی گئی ہیں۔

لڑکی والدہ نے الزام عائد کیا ہے کہ یہ خودکشی نہیں بلکہ قتل ہے جس میں ان کا داماد ملوث ہے۔اور ان ہی کی مدعیت میں مقدمہ بھی درج کیا جا رہا ہے۔شوہر اسٹیٹ ایجنسی چلاتا ہے۔جس کا موقف ہے کہ جب میں گھر داخل ہوا تو اریبہ کی لاش پنکھے سے لٹک رہی تھی جسے اس نے نیچے اتارا۔متوفیہ اربیہ کی شمشاد احمد سے دوسری شادی تھی۔اس پہلے شوہر سے طلاق لے کر کچھ عرصہ قبل ہی دوسری شادی کی تھی۔

پولیس مختلف پہلوؤں سے واقعے کی تحقیقات کر رہی ہے۔دوسری جانب لکی مروت کے علاقے طبی مراد میں فاترالعقل لڑکی نے مبینہ طور پر خود پر فائرنگ کرکے خودکشی کرلی۔ پولیس نے میڈیاکے نمائندوں کو رابطے پربتایاکہ مقتولہ کے والدمختیارخان نے روزنامچہ رپورٹ درج کراتے ہوئے پولیس کو بتایاکہ گزشتہ روز وہ گھرمیں دیگراہلخانہ کے ہمراہ چائے پینے میں مصروف تھے کہ کمرے کے اندر سے فائرنگ کی آواز سنی جب وہ کمرے کے اندر داخل ہوئے توان کی بیٹی زخمی حالت میں خون میں لت پت پڑی تھی اسے فوری طور پر علاج معالجے کی غرض سے ہسپتال روانہ کردی کہ ہسپتال پہنچنے سے قبل زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہوگئی پولیس کے مطابق مدعی نیمزیدبتایاکہ ان کی بیٹی پیدائش طورپرذہنی مریض تھی جس نے خودکومبینہ طورپرپستول سے فائرنگ کرکے اپنی زندگی کا چراغ گل کردیا۔

Comments

comments