شمالی وزیرستان نا معلوم مسلح نقاب پوش افراد کی فایئرنگ سے دو قبایئلی جاں بحق،۔انتظامیہ خاموش تماشائی ۔

  • FB_IMG_1596918533727.jpg

میرانشاہ نمائندہ۔
شمالی وزیرستان نا معلوم مسلح نقاب پوش افراد کی فایئرنگ سے دو قبایئلی جاں بحق،لاشوں کو میرانشاہ ھسپتال منتقل کیا گیا۔انتظامیہ خاموش تماشائی بیٹھا ہے۔

شمالی وزیرستان کے تحصیل دتہ خیل علاقہ دیگان میں نامعلوم مسلح نقاب پوش افراد کی فائیرنگ کا نشانہ بننے والےدو افراد کی لاشوں کو سرکاری اہلکاروں نے میرانشاہ ھسپتال منتقل کئے،پولیس کا کہنا ھے کہ آج صبح کے وقت فایئرنگ کی آواز یں سنی گئی جسکے بعد مقامی لوگو ں کی نشاندہی پر جائے وقوعہ پہنچ کر دو افراد کی لاشیں گولیوں سے چھلنی پڑی ملی،جنکو ورثاء کے حوالے کرنے کیلئے میرانشاہ ھسپتال منتقل کیاگیا،ان میں سے ایک کی شناخت محمد شریف ولد پیر حوالدار گاوں غز لمئی تحصیل دتہ خیل جبکہ دوسرے لاش کی شناخت صدیق اللہ ولد گل زالی خان جانی خیل وزیر کے نام سے ھوئی۔
دونوں لاشوں کو میرانشاہ ھسپتال پہنچایا گیا تاکہ انکے رشتہ داروں یا خاندان والوں کے حوالےکئے جائیں ۔
واضح رہے کہ شمالی وزیرستان کے مختلف علاقوں میں ٹارگٹ کلنگ کے واقعات میں تیزی سے اضافہ ھو رہا ھےجس پر مقامی لوگوں میں سخت تشویش پائی جاتی ھےاور روک تھام کیلئے ضلعی انتظامیہ نے ابھی تک کوئی اقدامات نہیں کیا ہے جو کہ ٹارگٹ کلنگ میں روز با روز اضافہ واضح ثبوت ہے۔ دوسری طرف پچھلے دنوں اتمانزئی وزیر اور داوڑ کے ملکان و مشران اور عوام کا ایک گرینڈ جرگہ بمقام عیدگاہ گاوں درپہ خیل منعقد ھوا اور دوسراجرگہ رزمک کے مقام پر بلایا گیا ھے جسمیں قومی سطح پر اھم فیصلے متوقع ھیں اور ان جرگوں کے ایجنڈے میں ٹارگٹ کلنگ اور امن و امان کی بگڑتی ھوئی صورتحال پر قابو پاناسرفہرست ھے۔

Comments

comments