پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹوزرداری نے کہاہے کہ 27دسمبر کو بے نظیر بھٹو کی برسی لیاقت باغ میں منائی جائیگی

  • IMG_20191210_002705.jpg

اسلام آباد: پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹوزرداری نے کہاہے کہ 27دسمبر کو بے نظیر بھٹو کی برسی لیاقت باغ میں منائی جائیگی اورعوام سلیکٹڈ حکومت کو للکاریں گے ،پاکستان کے عوام کٹھ پتلی تماشے نہیں دیکھنا چاہتے بلکہ اپنے مسائل کاحل چاہتے ہیں۔

اسلام آباد میں پمز ہسپتال کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بلاول بھٹوزرداری نے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ عدالتوں سے انصاف ملے گا اور آصف زرداری کو وہ سہولتیں ملیں گی جو ہر پاکستان کے شہری کاحق ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کے زبان بندی کے حربے جاری ہیں لیکن ہم حکومت کیخلاف جدوجہد جاری رکھیں گے ۔

انہوں نے کہا کہ 27دسمبر کو بے نظیر بھٹو کی برسی لیاقت باغ میں منائی جائیگی اورعوام سلیکٹڈ حکومت کو للکاریں گے ۔ پاکستان کے عوام کٹھ پتلی تماشے نہیں دیکھنا چاہتے بلکہ اپنے مسائل کاحل چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آج ہمارے وزیر اعظم اینٹی کرپشن ایپ کا افتتاح کررہے تھے لیکن کیا عمران خان پانامہ میں آنیوالوں ناموں اوراپنے نا اہل ڈپٹی وزیر اعظم کا احتساب کرچکے ہیں؟

وزیراعظم کرپٹ لاگوں کو دھونڈنے کے لئے موبائل ایپ لانچ کررہے تھے لیکن انہیں اپنے ارد گرد بیٹھے کرپٹ لوگ نظر نہیں آرہے، موبائل ایپ ایوانوں میں بیٹھے کرپٹ لوگوں کو کیوں نہیں پکڑ سکی، بی آرٹی مالم جبہ کیس کی آج تک کوئی تفتیش نہیں ہوئی، اپنی جعلی حکومت بچانے کے لئے سمجھوتے کرتے ہیںانہوں نے کہا کہ عمران خان ایسے ہی سلیکٹڈ ہیں جیسے سلیکٹڈ ماضی میں آتے رہے ہیں۔

نا اہل حکومت کی وجہ سے عوام پریشان ہیں، حکومت سیاسی مخالفین پر دبا ڈالنا چاہتی ہے ، عمران خان نواز شریف کوملک سے باہر بھیج کرکہتے ہیں کہ چھوڑوں گا نہیں۔بلاول بھٹوزرداری کا کہناتھا کہ آصف زرداری نے مجھے بتایاہے کہ میڈیکل بورڈ ز کی ابھی تک رپورٹس نہیں آئیں ، رپورٹس آنے کے بعد عدالت فیصلہ کرے گی اور اگر آصف زرداری کو طبی وجوہات پر ضمانت ملی تو آصف زرداری کوعلاج کیلئے کراچی منتقل کریں گے ۔

انہوں نے کہا کہ جب سے عمران خان کی حکومت آئی ہے ، اس کاخواب ہے کہ سندھ پر بھی ایک کٹھ پتلی وزیر اعلی ہو لیکن ہر بار وفاقی حکومت کی کوشش ناکام ہوئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کئی بار یہ سنا گیا کہ وزیر اعلی سندھ جانیوالاہے اور اس کی گرفتاری قریب ہے لیکن سندھ میں پیپلز پارٹی کے پاس تاریخی مینڈیٹ ہے ،

کئی بار پیش گوئیاں کی گئیں کہ سندھ حکومت جارہی ہے،لیکن اب بھی قائم ہے ،سندھ سے پیپلز پارٹی کی حکومت ختم کرنا ممکن نہیں ہے کیونکہ ہمارے 99ارکان صوبائی اسمبلی ہیں،سندھ میں گورنرراج وفاقی حکومت کا خواب ہے،چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ نوازشریف کو سزا ہوچکی تھی اور آصف زرداری پر صرف الزامات ہیں اور کوئی الزام ثابت بھی نہیں ہوا لیکن وہ پھر بھی جیل میں ہیں،

طبی بنیادوں پرنوازشریف کو ریلیف ملنا ان کاحق تھا، آصف زرداری کی میڈیکل بورڈ کی رپورٹ عدالت میں پیش کی جائے گی، ضمانت ہوئی توآصف زرداری کوکراچی کے اسپتال میں منتقل کریں گے، امید ہے عدالت سے انصاف ملے گا۔

Comments

comments