امن کی خاطر جانیں دینے والے شہدا ہمارے ماتھے کا جھومر ہیں، ایمل ولی خان

  • IMG_20190804_233007.jpg

امن کی خاطر جانیں دینے والے شہدا ہمارے ماتھے کا جھومر ہیں، ایمل ولی خان
سرتاج خان کو دن دیہاڑے گولی مار دی گئی، مثالی پولیس تاحال قاتلوں کی گرفتاری میں ناکام ہے۔
پولیس کا رویہ مشکوک ہے، قاتلوں کی گرفتاری تک ہم اپنے مؤقف سے پیچھے نہیں ہٹیں گے۔
دہشت گردوں اور ان کے سرپرستوں کو سامنے لایا جائے،اے این پی آئندہ کا لائحہ عمل جلد طے کرے گی۔
مستقبل میں کسی بھی واقعے کی صورت میں ایف آئی آر گورنر،وزیر اعلیٰ کے خلاف درج کرائی جائے گی۔
تحفظات کے باوجود پولیس شہدا کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں۔سرتاج خان کی یاد میں تعزیتی ریفرنس سے خطاب

پشاور(پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ امن کی خاطر جانوں کا نذرانہ دینے والے اے این پی کے شہدا ہمارے ماتھے کا جھومر ہیں اور ان شہدا کی قربانیاں تاریخ کا انمٹ باب ہیں، باچا خان مرکز پشاور میں اے این پی سٹی ڈسٹرکٹ کے زیر اہتمام سرتاج خان شہید کی یاد میں منعقدہ تعزیتی ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایمل ولی خان نے کہا کہ سرتاج خان کو دن دیہاڑے بھرے بازار میں گولی مار دی گئی لیکن صوبے کی مثالی پولیس تاحال قاتلوں کی گرفتاری میں ناکام ہے، انہوں نے کہا کہ پولیس کے رویے سے شکوک و شبہات میں اضافہ ہو رہا ہے لیکن ہم قاتلوں اور ان کے پیچھے موجود محرکات کو سامنے لانے تک اپنے مؤقف سے پیچھے نہیں ہٹیں گے، ایمل ولی خان نے مزید کہا کہ ہمیں واقعے کی سی سی ٹی وی فوٹیج کے حوالے سے مطمئن کیا گیا لیکن وہ فوٹیج بھی تاحال سامنے نہیں آ سکی جس سے ظاہر ہو رہا ہے کہ ثبوت مٹانے کی کوشش کی جا رہی ہے، انہوں نے کہا کہ اے این پی اپنے شہدا کے خون کا حساب لے گی اب مزید خاموش نہیں رہیں، مستقبل میں اے این پی کے کسی بھی کارکن کو نقصان پہنچا تو ایف آئی آر وزیر اعلیٰ، گورنر اور آئی جی پی کے خلاف درج کرائی جائے گی، انہوں نے کہا کہ قاتلوں کی عدم گرفتاری کی صورت میں آئندہ کا لائحہ عمل طے کریں گے، اس موقع پر انہوں نے یوم شہدا پولیس کا بھی حوالہ دیا اور کہا کہ سرتاج خان کے معاملے میں تحفظات کے باوجود پولیس شہداء کی قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں،یوم شہداء منانے کا مقصد تجدید عہد اور عوام کی جان و مال کے تحفظ کے لیے جانوں کانذرانہ پیش کرنے والے قوم کے عظیم سپوتوں کوسلام پیش کرناہے،شہدا کسی بھی قوم کے ہیرو ہوتے ہیں اور وہ قومیں اور معاشرے ہمیشہ زندہ رہتے ہیں جو اپنے شہدا کی قربانیوں کو یاد رکھتے ہیں،شہدائے پولیس اور ان کے کارنامے نئے آنے والے افسران اور جوانوں کیلئے مشعل راہ ہیں، ایمل ولی خان نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف یکجہتی کی فضا بننی چاہئے اور ریاست کی پہلی ترجیح دہشت گردی کا خاتمہ ہونا چاہیے،انہوں نے مزید کہا کہ ملک میں امن کا قیام یقینی بنانے اور نیشنل ایکشن پلان کے مطابق تمام وہ اقدامات اُٹھانے ہونگے جس سے دہشت گردی کے ناسور کو جڑ سے اُکھاڑ پھینکا جا سکے۔img_20190804_233007

Comments

comments