سفاری پارک میں ہاتھیوں کے پنجرے میں شاور نصب

  • C4558B2E-F889-4654-9453-4B7B5C995832.jpeg

کراچی: سفاری پارک میں ڈیڑھ ماہ کے دوران ہرن اور مارخور کے9 بچوں کی پیدائش کے بعد چڑیا گھر کی رونق بڑھ گئی جب کہ گرمی کے پیش نظر پارک انتظامیہ نے ہاتھی کے جوڑے کو گرمی سے محفوظ رکھنے کے لیے پنجرے میں شاور نصب کرادیے۔

سفاری پارک میں ہاتھی جوڑے ملکہ اور سونو کو نہلانے اور گرمی سے محفوط رکھنے کے لیے پارک انتظامیہ نے پنجرے میں 4شاور نصب کردیے ہیں اب جوڑا صبح 11 بجے سے شام 4 بجے تک 4 نہا سکے گاسفاری پارک میں ہرن کی مختلف نسلوں چیتل کے ہاں ایک ، اڑیال کے ہاں ایک ، کالا ہرن کے ہاں 3 اور مارخور کے 4 بچوں کی پیدائش ہوئی ہے ،اچھلتے کودتے بھاگتے دوڑتے ہرن اور مارخور کے ننھے بچوں نے پارک کی رونق بڑھادی ہے۔

ڈائریکٹر سفاری پارک کنور ایوب نے بتایا ہے کہ کہ ہرن کی مختلف نسلوں کے ڈیڑھ ماہ کے دوران 5 جبکہ مارخور کے ہاں 4 بچوں کی پیدائش ہوئی ہے،مارخور کے ہر علاقے میں زندہ رہنا مشکل ہوتا ہے۔ سندھ کے مارخور کو زیادہ ٹھنڈک کی ضرورت نہیں ہوتی سفاری پارک میں گرم موسم میں جانوروں کی حفاظت کے لیے انتظامات کیے جاتے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ پنجروں میں برف کی سلیں رکھ دی جاتی ہیں ہاتھیوں کی دیکھ بھال ماوت جبکہ چڑیا گھر کے رکھوالے دیگر جانوروں کی دیکھ بھال کرتے ہیں جانوروں کے لیے ڈاکٹروں کی ٹیم موجود ہوتی ہے ہاتھی کے پنجرے میں شاور لگانے سے سفاری پارک آنے والے بچے بھی خوب محظوظ ہورہے ہیں ،پائپ کے بجائے شاور سے ہاتھیوں کو نہلانے میں اب سہولت ہوگئی ہے۔

کنورایوب کا مزید کہنا تھا کہ فنڈز کی کمی کے باوجود محدود وسائل میں جانوروں کی اچھی دیکھ بھال جاری ہے اس کا ثبوت سفاری پارک میں جانوروں کے بچوں کی پیدائش ہے ، 207 ایکڑ رقبے پر محیط سفاری پارک بہترین تفریحی مقام کے ساتھ شہریوں کو قدرتی ماحول فراہم کرتی ہے۔

 

Comments

comments