بھارتی تاجر کا ملازمین کیلئے دیوالی پر 600 گاڑیوں کا تحفہ

  • 192050_3746572_updates.jpg

 

حالیہ دنوں میں جب دنیا بھر میں بگڑتی ہوئی معاشی صورت حال کے باعث کمپنیاں  اپنے ملازمین کو فارغ کرنے پر مجبور ہیں وہیں بھارت کے شہر سورت میں صورت حال بالکل ہی مختلف ہے۔

ہیروں کے کام سے جڑی ایک بھارتی کمپنی ہری کرشنا ایکسپورٹس کے چیئرمین ساوجی ڈھولکیا نے ہندووں کے مذہبی تہوار دیوالی پر کمپنی کے ملازمین کی خوشی دوبالا کرنے کے لیے کچھ انوکھا کیا۔

 کمپنی کی جانب سے 600 ملازمین کو گاڑیاں دینے کا اعلان کیا گیا اور گاڑیوں کی چابیاں دہلی میں منعقدہ ایک تقریب میں ملازمین کے حوالے کی گئیں۔

گاڑیوں کا یہ تحفہ بطور دیوالی بونس کے ملازمین کی محنت اور جذبے کو مدنظر رکھتے ہوئے دیا گیا۔

چمچماتی کاروں کا تحفہ پاکر دیوالی سے پہلے ہی ملازمین کے دلوں میں خوشی کے پٹاخے پھوٹ گئے۔

an image
ڈائمنڈ فرم کے چیئرمین ساوجی ڈھولکیا تقریب میں ملازمین سے خطاب کر رہے ہیں۔فوٹو کریڈٹ نیوز ایجنسی

کمپنی کے چیئرمین کے مطابق منافع زیادہ ہو یا کم، یہ سلسہ برسوں سے کمپنی کا معمول بن چکا ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ ملازمین میں ہنر بڑھانے اور ان میں کام کی لگن بڑھانے کے لیے الگ سے رقم مختص کی گئی ہے۔ اس طرح ملازمین کو بونس دینا کبھی بھی کمپنی پر بوجھ نہیں بنتا۔

تقریب میں چابیاں لینے کے بعد کمپنی کے ملازمین نے اپنی خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ذاتی گاڑی ان کا دیرینہ خواب تھا۔

چیئرمین ساوجی ڈھولکیا کے مطابق ملازمین کو کار ملنے کا خواب پورا کرنا ان کا اپنا خواب بھی تھا۔ اس میں نہ صرف کمپنی ملازمین کا فائدہ ہے بلکہ کمپنی کا اپنا فائدہ بھی ہے۔

تقریب میں بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے وڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے چابی ملنے والے خوش نصیب ملازمین سے خطاب بھی کیا۔ چند ملازمین کو وزیراعظم مودی نے اپنی رہائشگاہ پر گاڑی کی چابی اُن کے حوالے کی۔

an image
بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی ڈائمنڈ فرم کی ایک ملازمہ کو گاڑی کی چابی دیے رہے ہیں۔فوٹو: ہری کرشنا ایکسپورٹس

ہری کرشنا ایکسپورٹس کی جانب سے یہ روایت 2011 سے جاری ہے۔ کمپنی میں کام کرنے والے ملازمین میں اب تک 1800کاریں تقسیم کی جا چکی ہیں۔ جن میں تین ملازمین کو دی جانے والی مہنگی ترین گاڑیاں مرسڈیز بھی شامل ہیں۔گاڑیوں کے علاوہ دیے جانے والے دیگر تحفوں میں فکسڈ ڈپازٹ سرٹیفیکیٹ، زیورات ہیں۔

Comments

comments