چند لوگ گئے، شاید ان کو امید نہیں تھی پارٹی ان کو ٹکٹ دے گی، بلیغ الرحمن

وفاقی وزیر برائے تعلیم و پیشہ وارانہ تربیت انجینئرمیاں محمد بلیغ الرحمن نے کہا ہے کہ (ن) لیگ سے جتنے بھی لوگ گئے ہیں یہ اس تعداد سے کہیں کم ہے جو 2013ء کے انتخابات کے دوران یا بعد میں (ن) لیگ میں شامل ہوئے تھے، سیاسی جماعتوں میں ہمیشہ بہتری کی گنجائش رہتی ہے اور ہم سب کے رویوں میں بہتری کی گنجائش رہتی ہے، ہر پارٹی کو مزید بہتر ہونا چاہیے، جب عام انتخابات کا اعلان ہوگا تو (ن) لیگ کی باقاعدہ انتخابی مہم اس وقت شروع ہو گی۔ان خیالات کا اظہار میاں بلیغ الرحمن نے نجی ٹی وی سے انٹرویو میں کیا۔ان کا کہنا تھا کہ (ن) لیگ سے جتنے بھی لوگ گئے ہیں یہ اس تعداد سے کہیں کم ہے جو 2013ء کے انتخابات کے دوران یا بعد میں (ن) لیگ میں شامل ہوئے تھے چند لوگ خوش نہیں تھے شاید ان کو امید نہیں تھی کہ پارٹی ان کو ٹکٹ دے گی۔چند لوگ گئے ہیں ایسی مسئلہ کی کوئی بات نہیں ہے پارٹیوں میں کچھ نہ کچھ نقل و حرکت ہوتی رہتی ہے ان کا کہنا تھا کہ ہو سکتا ہے کہ کسی ایک شخص کو کوئی جیوئن مسئلہ ہو میں کہہ نہیں سکتا مگر زیادہ تر میں سمجھتا ہوں کہ ان کو لالچ یا بہتر مستقبل نظر آ رہا ہے یا وہ یہ سمجھتے ہیں کہ کہیں اور جگہ وہ زیادہ خوش رہیں گے یا ان کے نظریات تبدیل ہو گئے ہیں ان میں یہ بہانہ شاید اتنا مناسب نہیں ہے ان کا کہنا تھا کہ جماعتوں میں ہمیشہ بہتری کی گنجائش رہتی ہے ہم سب کے رویوں میں بہتری کی گنجائش رہتی ہے ہر پارٹی کو مزید بہتر ہونا چاہیے میاں بلیغ الرحمن کا کہنا تھا کہ 2018ء کے انتخابات کے لیے میری اطلاع کے مطابق ابھی ٹکٹوں کی تقسیم کے لیے بورڈ تشکیل نہیں پائے مگر وہ اپنے وقت پرہو جائیں گے ان کا کہنا تھا کہ (ن) لیگ کے اکثر لوگ پہلے جیتے ہوئے ہیں وہ متحرک ہیں اور ان کی انتخابی مہم ہر وقت چلتی رہتی ہے تاہم جب انتخابات کا اعلان ہوگا تو باقاعدہ انتخابی مہم اس وقت شروع ہو گی۔

Comments

comments