میاں نوازشریف کا کہنا ہےکہ پچھلے 70 سالوں سے ملک کے ساتھ جو کچھ ہورہا ہے اس سے بغاوت کرتا ہوں۔

سابق وزیراعظم میاں نوازشریف نے کہا ہے کہ پچھلے 70 سالوں سے ملک کے ساتھ جو کچھ ہورہا ہے اس سے بغاوت کرتا ہوں۔بہاولپور میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے نوازشریف نے کہا کہ ایسا جشن کبھی نہیں دیکھا، یہ الیکشن سے پہلے الیکشن ہوگیا بلکہ ریفرنڈم بھی ہوگیا۔انہوں نے کہا کہ پچھلے چار سالوں میں مخالفین نے کچھ کرنے نہیں دیا، کبھی دھرنے، جلسے جلوس اور کبھی عدالتوں میں گئے لیکن(ن) لیگ اور نوازشریف نے پاکستان کے بڑے بڑے مسائل ختم کردیئے، ہم نے لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کردیا، بجلی واپس لے آئے، ہمیں ناز ہے ہم نے ملک کے بڑے مسائل ختم کردیئے۔سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ہم نے بہت بڑا معرکہ مارا ہے، کسی اور پارٹی کا نام لیں، پیپلزپارٹی، پی ٹی آئی اور کسی بھی پارٹی کا نام لیں، کسی نے کبھی کوئی موٹروے بنائی؟ کیا کسی نے اتنے بجلی کے کارخانے لگائے؟ کیا کسی نے دہشت گردی کا خاتمہ کیا؟ یہ سب ٹانگیں کھینچنے والے لوگ ہیں، ان کی ٹانگیں اب عوام نے کھنیچنی ہیں۔انہوں نے کہا کہ مجھے اس لیے نکالا گیا کہ میں نے بیٹے سے تنخواہ نہیں لی، اگر تنخواہ لی ہوتی تو پھر کیا ہوتا؟ کہتے ہیں تم وزارت عظمی سینااہل ہو، کہتے ہیں ہمیشہ کے لیے نااہل کرنا ہے، کیا عوام کو یہ منظور ہے؟میاں نوازشریف نے کہا کہ ملک کے ساتھ 70 سالوں سے ہماری نسلوں کے ساتھ ظلم ہوئے ہیں، ہم نے 70 سالوں میں بہت ٹھوکریں کھائی ہیں، پاکستان کو تباہ و برباد کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی گئی، جو کچھ ملک کے ساتھ ان 70 سالوں سے ہورہا ہے اس سے بغاوت کا اعلان کرتا ہوں۔مسلم لیگ(ن) کے قائد کا کہنا تھا کہ پاکستان اس وقت تک قابل نہیں بن سکتا جب تک ہم 70 سالوں کی تاریخ کو نہیں بدلیں گے، آپ کا مستقبل روشن کرنے کے لیے ہر وہ کام کروں گا جو آپ کا مستبقل تابناک کرے، ہمارے آئندہ 70 سال پچھلے 70 سالوں سے بہت بہتر ہونے چاہئیں اور وہ تب بہتر ہوں گے جب ہم اپنا حق مانگیں گے۔سابق وزیراعظم نے کہا کہ اگر اپنا حق مانگنے سے نہ ملے تو اسے چھین لیں، ہم یہ طے کریں گے کہ اپنے ووٹ کی عزت کرائیں گے، یہ عوام کا مجھ سے وعدہ ہونا چاہیے، نوازشریف وہ وعدہ نہیں کرتا جو پورا نہ کرسکے، 70 سالوں سے ووٹ پاں تلے روندتے رہے ہیں، عوام وعدہ کریں ہم آئندہ کسی کو بھی ووٹ کو پاوں تلے روندنے کی اجازت نہیں دیں گے۔ہم کسی کو ووٹ کی عزت پرڈاکہ نہیں ڈالنے دیں گے۔ حق نہ ملے تو حق چھیننا پڑے گا،دوسری جانب جلسے سے خطاب میں نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کا کہنا تھا کہ سینیٹ انتخابات اور چیئرمین سینیٹ کے لیے منڈیاں لگی ہوئی ہیں لیکن ووٹ بیچنے والوں کو رونا پڑے گا، عمران خان پچھلے دنوں ایک ہی بات کررہے تھے کہ ان کے ارکان بک گئے لیکن اب عمران نے اپنے سینیٹرز کو زرداری کے قدموں میں ڈال دیا۔انہوں نے کہا کہ عمران خان نے جس کو پاکستان کی سب سے بڑی بیماری، ڈاکو اور چور کہا، آج اسی کے قدموں میں اپنے سینیٹرز کو ڈھیر کردیا۔ تحریک انصاف نے 2017 میں 70 لاکھ ووٹ لیے لیکن اس جماعت نے 500 ووٹ لینے والے کے ہاتھ اپنی پارٹی پکڑادی۔مریم نواز کا کہنا تھا کہ عمران خان نے زرداری صاحب کے دربار پر عبدالقدوس کی چادر میں چھپ کر حاضری دی لیکن آپ کیا سمجھتے ہو، عوام کو پردے کے پیچھے سے کچھ نظر نہیں آرہا۔مسلم لیگ(ن)کی رہنما نے عمران خان کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ تمہاری لڑائی نوازشریف سے ہے لیکن ہتھیار زرداری کے سامنے ڈال دیئے، عمران نے جو آصف زرداری سے پس پردہ ہاتھ ملایا ہے اس ڈرامے کا ڈراپ سین جلد ہوگا۔ان کا کہنا تھا کہ ہمیں عمران کے گھر کی ریگولرائزیشن نہیں چاہیے، یہ معاملہ این او سی کا نہیں جھوٹ کا ہے اور یہ معاملہ کاغذات کا نہیں بلکہ جھوٹ بولنے اور عدالت میں جعلی کاغذات داخل کرانے کا ہے۔مریم نواز نے مزید کہا کہ نوازشریف 5 روپے کا جرم ثابت ہوئے بغیر سزائیں بھگت رہے ہیں لیکن اس کے باوجود وہ جمہوریت آئین اور قانون کی حکمرانی کے لیے آج بھی سینہ تان کر کھڑے ہیں انہوں نے کہا کہ پاکستان کے عوام کو سب معلوم ہے کہ پردے کے پیچھے کیا ہو رہا ہے کان کو کہیں سے بھی پکڑ لو بات تو ایک ہی ہے۔ پاکستان میں ووٹوں کی منڈیاں لگی ہوئی ہیں لیکن ووٹ بیچنے والوں کو رونا پڑے گا، نوازشریف نا منڈیاں لگاتا ہے نہ لگانے کی اجازت دیتا ہے، ووٹ بیچتا نہیں بلکہ خرید و فروخت کرنے والوں کے درمیان کھڑا ہوجاتا ہے، جو دبا نوازشریف پر آیا ایسا دیگر لیڈروں پر آتا تو یہ گھروں میں چھپ کربیٹھ جاتے۔ انہوں نے مزید کہا کہ نوازشریف کا پاناما میں نام نہیں تھا تو پھر لاڈلا کون ہے، اگر ترازو کا پلڑہ لاڈلے کی طرف جھکے گا تو نانصافی ہوگی، معزز ججز نے کہا ہے کہ عمران خان جرمانہ دے دیں تو ان کا گھر ریگولرائز کردیاجائے گا لیکن جج صاحب ہم آپ کو یہ نہیں کرنے دیں گے، اب معاملہ دھاندلی کا نہیں،یہ معاملہ جھوٹ بولنے کا ہے، بتایا جائے کہ عدالت میں جھوٹ بولنے پرآرٹیکل 62 لگتا ہے یا نہیں؟

بہاولپور: سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کا کہنا ہےکہ پچھلے

70 سالوں سے ملک کے ساتھ جو کچھ ہورہا ہے اس سے بغاوت کرتا ہوں۔

بہاولپور میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے نوازشریف نے کہا کہ ایسا جشن کبھی نہیں دیکھا، یہ الیکشن سے پہلے الیکشن ہوگیا بلکہ ریفرنڈم بھی ہوگیا۔

انہوں نے کہا کہ پچھلے چار سالوں میں مخالفین نے کچھ کرنے نہیں دیا، کبھی دھرنے، جلسے جلوس اور کبھی عدالتوں میں گئے لیکن (ن) لیگ اور نوازشریف نے پاکستان کے بڑے بڑے مسائل ختم کردیئے، ہم نے لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کردیا، بجلی واپس لے آئے، ہمیں ناز ہے ہم نے ملک کے بڑے مسائل ختم کردیئے۔

Comments

comments