خیبرپختونخوا کی اپوزیشن جماعتوں نے بلین سونامی ٹری پراجیکٹ میں گھپلوں اور کرپشن کی تحقیقات کا مطالبہ کر دیا

  • IMG_20180226_201412.jpg

اپوزیشن جماعتوں نے سونامی بلین ٹری پراجیکٹ میں گھپلوں اور کرپشن کے الزامات لگاتے ہوئے احتساب کمیشن سے تحقیقات کرانے کا مطالبہ کر دیا ۔خیبرپختونخوا اسمبلی اجلاس کے دوران عوامی نیشنل پارٹی کے رکن صوبائی اسمبلی سید جعفر شاہ نے کہا کہ سونامی بلین ٹری پراجیکٹ کے منصوبے میں مبینہ طور پر اربوں روپے کی کرپشن ہوئی ہے ۔اگر حکومت کہتی ہے کہ مذکورہ پراجیکٹ میں کرپشن نہیں ہوئی تو اس معاملے کو احتساب کمیشن کے حوالے کرے ۔انہوں نے کہا کہ ڈبلیو ڈبلیو ایف کو حکومت نے صرف 10 فیصد پودے دکھائے ہیں ۔سابق صوبائی وزیر ضیاء اللہ آفریدی نے کہا کہ عمران خان کرپشن ختم کرنے کے دعوے تو کر رہے ہیں لیکن دوسری جانب ان کی حکومت کرپشن چھپا رہی ہے اس لئے سپیکر رولنگ دیں کہ مذکورہ منصوبے کی انکوائری کی جا سکے تاہم اس کے جواب میں صوبائی وزیر مشتاق غنی نے کہا کہ ڈبلیو ڈبلیو ایف نے بلین ٹری منصوبے کی تعریف کی ہے ۔انہوں نے کہا کہ الزام لگایا جارہا ہے کہ حکومت نے 25 روپے فی پودا خریدا ہے لیکن وہ واضح کرتے ہیں کہ حکومت نے 2 روپے کا ایک پودا خریدا ہے ۔انہوں نے کہا کہ حکومت کو احتساب کمیشن میں جانے کی کوئی ضرورت نہیں ہے اور اگر کسی کو شک ہے تو وہ خود احتساب کمیشن سے رابطہ کرے ۔انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے 350میں سے کئی ڈیمز مکمل کر لئے ہیں جو اپوزیشن کو نظر نہیں آرہے ہیں ۔ صوبائی حکومت نے باب پشاور فلائی اوور بھی بنایا ہے ۔
خیبرپختونخوا اسمبلی اجلاس میں سی ڈی وسٹیج ڈراموں کے سنسر بورڈ کے قیام کے حوالے سے بل منظور کیاگیا ۔پیر کے روز منعقد ہونے والے صوبائی اسمبلی کے اجلاس میں 58مختلف پراجیکٹ کے 4ہزار سے زائد ملازمین اور 158ڈاکٹروں کو مستقل کرنے کا بل بھی منظور کرلیا گیا ۔تفصیلات کے مطابق خیبرپختونخو اسمبلی نے سی ڈی و سٹیج ڈ راموں کے سنسر بورڈ کے قیام کے حوالے سے بل منظور کرلیا ۔بل کے مطابق کوئی بھی سٹیج ڈرامہ یا سی ڈی ڈرامہ بورڈ کی اجازت کے بغیر پیش نہیں کیا جا سکے گا جبکہ سنسر بورڈ مذہب،ملک اور سیکورٹی اداروں کے خلاف مواد کو ریلیز کرنے سے روکنے کا مجاز ہو گا ۔دوسری جانب صوبائی اسمبلی کے اجلاس میں 58پراجیکٹ کے چار ہزار سے زائد ملازمین اور 158ڈاکٹروں کو بھی مستقل کرنے کا بل منظور کرلیا گیا ۔
شام میں ہونے والے انسانیت سوز مظالم کے خلاف قراردا د خیبرپختونخوا اسمبلی نے منظور کرلی ۔قرارداد مسلم لیگ(ن)کی خاتون رکن صوبائی اسمبلی آمنہ سردار نے پیش کی ۔قراردا د میں کہا گیا ہے کہ شام میں ہزاروں بے گناہ لوگ مر رہے ہیں اور شام کی جنگ دنیا کے جنگی اصولوں کے منافی جاری ہے ۔قرارداد میں وفاقی حکومت سے مطالبہ کیاگیا ہے کہ وہ جنگ روکنے کیلئے سفارتی تعلقات کا استعمال کرے ۔ مذکورہ قرارداد صوبائی اسمبلی نے اتفاق رائے سے منظور کرلی ۔

Comments

comments