اسلام آبادکی احتساب عدالت نے ملزم انعام اکبرکو ایک مرتبہ پھر پیش کرنے کا حکم

  • IMG_20190516_231259.png

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)سابق وزیراعظم یوسف رضاگیلانی ،انعام اکبراوردیگر ملزمان کیخلاف قواعدوضوابط کی خلاف ورزی کرتے ہوئے اشتہاری مہم کا ٹھیکہ دینے کا کیس،اسلام آبادکی احتساب عدالت نے ملزم انعام اکبرکو ایک مرتبہ پھر پیش کرنے کا حکم دیدیا،ہوم سیکرٹری سندھ کوملزم کی پیشی کیلئے پروڈکشن آرڈرجاری کرنے کی ہدایت، قومی احتساب بیوروکی جانب سے دائر کئے گئے ریفرنس کی سماعت جمعرات کے روزاسلام آبادکی احتساب عدالت نمبردوکے جج محمد ارشدملک نے کی،ملزم انعام اکبر کے حوالے سے تفتیشی افسرنے بتایاکہ انعام اکبرایک کیس میں ملیر جیل میں قیدہیں ،اس لئے انہیں پیش نہیں کیاجاسکا،نیب پراسیکیوٹرنے موقف اختیار کیاکہ کراچی کی احتساب عدالت میں انعام اکبراوردیگرملزمان کیخلاف کیس زیرسماعت ہے سپریم کورٹ نے اس کیس کی روزانہ کی بنیادپر سماعت کرکے مقررہ وقت میں مکمل کرنے کاحکم دے رکھاہے، ملزم انعام اکبرکواس کیس میں پیش کرناہوتاہے اس لئے اسلام آبادکی احتساب عدالت میں اس سماعت پر پیش نہیں کیاجاسکا،احتساب عدالت نے آئندہ سماعت پر ملزم کو پیش کرنے کا حکم دیتے ہوئے سیکرٹری داخلہ سندھ کوہدایت کی کہ ملزم کے پروڈکشن آرڈرجاری کئے جائیں،کیس کی مزید سماعت تیس مئی تک ملتوی کردی گئی،سابق وزیراعظم یوسف رضاگیلانی نے مذکورہ کیس میں حاضری سے مستقل استثاء حاصل کررکھاہے،واضح رہے کہ نیب کی جانب سے سابق وزیراعظم یوسف رضاگیلانی میڈاس ایڈورٹائزنگ کمپنی کے سی ای او انعام اکبراور دیگرملزمان کیخلاف ریفرنس دائر کررکھاہے جس میں ملزمان پر الزام ہے کہ انہوں نے باہمی سازبازکرکے میڈاس نامی کمپنی کے ذریعے چودہ اپریل 2012سے22اپریل2012کے دوران 32ٹیلی ویژن چینلزپر یونیورسل سروس فنڈکی الیکٹرانک میڈیامہم جاری کی،قومی احتساب بیورونے یونیورسل فنڈکی طرف سے میڈاس پرائیویٹ لمیٹیڈکو پندرہ کروڑ روپے کے لگ بھگ ادائیگیوں کے معاملے کی تحقیقات کرتے ہوئے اس معاملے میں 32ٹی وی چینلزسے رپورٹ بھی طلب کی تھی ،،نیب راولپنڈی کی جانب سے یہ ریفرنس احتساب عدالت میں دائر کیاگیاتھاجس میں موقف اختیارکیاگیاتھاکہ وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی کے سابق سیکرٹری فاروق اعوان،یونیورسل سروس فنڈکے سابق سی ای او ریاض اشعر صدیقی ،یو ایس ایف کے سابق سیکرٹری حسن شیخ،میڈاس کمپنی کے سی ای او اور سابق پی آراو وزارت آئی ٹی محمدحنیف نے مل کر اپنے اختیارات کا ناجائزاستعمال کرتے ہوئے میڈاس کمپنی کے ذریعے اشتہاری مہم جاری کی جس سے قومی خزانے کو بھاری نقصان ہوا،نیب کے مطابق یوایس ایف کی26ویں بورڈ میٹنگ اٹھائیس دسمبر2011کو ہوئی،اس وقت کے وزیراعظم یوسف رضاگیلانی جو اس وقت وزارت آئی ٹی کے وزیراوریوایس ایف بورڈ کے چیئرمین بھی تھے نے یہ اشتہاری مہم جاری کرنے کی ہدایت کی تھی،سابق سیکرٹری وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی فاروق اعوان نیاختیارات کاناجائزاستعمال کرتے ہوئے میڈاس لمیٹیڈ سے غیرقانونی تشہیری مہم چلوائی اورقومی خزانے کو نقصان پہنچایا،میڈاس کے سی ای او نے پریس انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ کی ہدایات اور وضع کردہ ضابطوں کیخلاف ورزی کرتے ہوئے ساری الیکٹرانک میڈیامہم حاصل کی ،اوریہ مہم حاصل کرنے کیلئے وزارت آئی ٹی یا یوایس ایف سے کوئی تحریری حکمنامہ (ریلیزآرڈر)بھی نہیں لیاگیاتھا۔

Comments

comments