وزیراعظم عمران خان سے اسلامی فوجی اتحاد کے سربراہ راحیل شریف کی ملاقات

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان سے اسلامی فوجی اتحاد کے سربراہ جنرل (ر) راحیل شریف نے ملاقات کی۔

جیونیوز کےمطابق وزیراعظم ہاؤس میں ہونے والی ملاقات میں ملکی و بین الاقوامی سلامتی کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا جب کہ اس دوران دہشت گردی کے خلاف اسلامی اتحاد کے اقدامات پر بھی بات چیت کی گئی۔

an image
وزیر خارجہ شاہ محمود اور جنرل (ر) راحیل شریف کی ملاقات: فوٹو/ حکومتِ پاکستان ٹوئٹر اکاؤنٹ

اس سے قبل وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے بھی اسلامی فوجی اتحاد کے سربراہ جنرل (ر) راحیل شریف نے ملاقات کی جس میں علاقائی امن و استحکام سمیت باہمی دلچسپی کے امور پرتبادلہ خیال کیا گیا۔

جنرل (ر) راحیل شریف نے وزیرخارجہ کو دہشت گردی کے خلاف اسلامی فوجی اتحاد کے اقدامات سے آگاہ کیا۔

جنرل (ر) راحیل شریف کی سربراہی میں اسلامی فوجی اتحاد کا وفد پاکستان کے دورے پر ہے، گزشتہ روز راحیل شریف نے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے بھی ملاقات کی تھی۔

واضح رہے کہ سعودی ولی عہد سلمان بن عبدالعزیز بھی 16 فروری کو بڑے وفد کے ہمراہ پاکستان پہنچ رہے ہیں اور جنرل (ر) راحیل شریف کے دورے کو بھی اس دورے کا تسلسل قرار دیا جارہا ہے۔

 

اسلام آباد: چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی اور سابق آرمی چیف و اسلامی فوجی اتحاد کے سربراہ جنرل (ر) راحیل شریف کے درمیان ملاقات ہوئی جس میں مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے جنرل (ر) راحیل شریف سے ملاقات کے دوران کہا کہ یہ اتحاد کسی خاص ریاست یا قوم کے خلاف نہیں بلکہ اتحاد دہشت گردی کے خلاف کوششیں مزید منظم بنانے کیلئے ہے۔

چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ اتحاد سے دنیا سے دہشت گردی کے خاتمے میں مدد ملے گی، پاکستان خطےکی ترقی و خوشحالی کیلئے مسائل کا پُر امن حل چاہتا ہے، امن ترقی کی ضمانت اور مذاکرات ہی مسائل کا حل ہیں۔

اس موقع پر جنرل (ر) راحیل شریف کا کہنا تھا کہ اسلامی فوجی اتحاد سے دہشت گردی کے خلاف عالمی کوششوں کو تقویت ملی، اتحاد دنیا بھر میں دہشت گردی کےخاتمے اور قیام امن کیلئےکوششیں مربوط بنائےگا۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان دہشت گردی کے خلاف ہمیشہ فعال کردار ادا کرتا رہا ہے۔

Comments

comments