اٹک میں ریلوے کی حدود میں عارضی قائم 100سے زائدخانہ بدوشوں کی جھگیوں کو گرا دیا گیا

اٹک میں ریلوے کی حدود میں عارضی قائم 100سے زائدخانہ بدوشوں کی جھگیوں کو گرا دیا گیا،خانہ بدوش سخت سردی میں کھلے آسمان تلے زندگی گزارنے پر مجبور،ضلعی انتظامیہ کی جانب سے خانہ بدوشوں کوکوئی متبادل جگہ فراہم نہیں کی گئی،جھگیوں کوگرانے کی نگرانی اسسٹنٹ انجینئر ریلوے میڈم ارسا نے کی۔۔۔
ریلوے ملازمین ہاتھوں میں ہتھوڑے ، کدالیں اور گینتیان اٹھائے ،ساتھ پولیس والے گلے میں مہلک ہتھیار اٹھائے پہنچے ان جھگیوں کو گرانے جہاں مظفر گڑھ، میانوالی، کندیاں، ڈیرہ غازی خان، بھکر اور دیگر علاقوں سے مزدوری کی غرض سے خانہ بدوش آبادہیں او ر دیکھتے ہی دیکھتے اٹک میں ریلوے کی حدود میں گزشتہ کئی سالوں سے عارضی قائم 100سے زائدخانہ بدوشوں کی جھگیوں کو گرا دیا گیا،جھگیوں کوگرانے کی نگرانی اسسٹنٹ انجینئر ریلوے میڈم ارسا نے کی۔۔۔
خانہ بدوش سخت سردی میں کھلے آسمان تلے زندگی گزارنے پر مجبورہیں ،انتظامیہ کی جانب سے کوئی متبادل جگہ فراہم نہیں کی گئی، قبیلے کے افراد نے مطالبہ کیا کہ ہم کو کچھ مہلت دی جائے تاکہ و ہ اپناسامان او ربیچے دوسری جگہ منتقل کرسکیں ۔۔۔
میاں والی سے تعلق رکھنے والے ایک خانہ بدوش کا کہنا تھا کہ تبدیلی کے نام پر عمران خان کو ووٹ دیا مگر ہمارے ساتھ انصاف نہیں ہورہا ،خانہ بدوشوں نے وزیر اعظم عمران خان سے متبادل جگہ فراہم کرنے کا مطالبہ کر دیا

Comments

comments