ملک بھر میں ایک کروڑ دس لاکھ سے زائد موبائل فون بلیک لسٹ قرار

  • IMG-20181130-WA0457.jpg

اسلام آباد
زبیر قصوری
پاکستان ٹیلی کام اتھارٹی کی طرف سے نافذ کیے جانے والا ڈی آئی آر بی ایس سسٹم کے کام کرنے کے ساتھ ہی ملک بھر میں ایک کروڑ دس لاکھ سے زائد موبائل فون بلیک لسٹ قرار پائے ہیں ذمہ دار ذرائع نے بتایا ہے کہ یہ وہ موبائل فونز ہےجو پرون ممالک سے بغیر ٹیکس ادا کیے مختلف ایئرپورٹس کے ذریعے میں افغانستان کے راستے پاکستان پہنچے تھے ایک کروڑ دس لاکھ سے زائد موبائل فون کی مالیت کا اندازہ لگایا جائے تو اربوں روپے بنتی ہے پی ٹی اے کے ذرائع نے بتایا ہے کہ ان تمام موبائل فونز کا ڈیٹا پاکستان ٹیلی کام اتھارٹی نے محفوظ کرلیا ہے اور آئندہ یکم جنوری 2019 کے بعد نئے آنے والے موبائل فونز کو پاکستان کے کسی نیٹ ورک پر بھی نہیں چلایا جائے گا جو بھی ٹیکس ادا کرے گا وہی موبائل فون کمپنیوں کے نیٹ ورک پر چلایا جائے گا اس اقدام کی بدولت پاکستان کے قومی خزانے کو اربوں روپے آمدن کا امکان ہے اور ملک میں دہشت گردی سمیت دیگر برائیوں سے نجات بھی مل جائے گی جبکہ ہر پاکستانی کا موبائل فون کا ڈیٹا بھی باقاعدہ تصدیق شدہ ہوجائے گا آئندہ سے کوئی بھی موبائل فون بغیر آئی ایم ای آئی ویری فکیشن کے پاکستان میں نہیں چل سکے گا ذرائع نے مزید بتایا ہے کہ چوری کے موبائل فون صرف صوبہ سندھ میں 14 ہزار سے زائد نیٹ ورک پر چلنے کی بھی خبر ہے انہوں نے بتایا ہے کہ جو موبائل فون کی چوری کی شکایت پی ٹی آ اےکو موصول ہو رہی ہیںان کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے گی اس سلسلے میں باقاعدہ طور پر قانون نافذ کرنے والی ایجنسیوں کے ساتھ پاکستان ٹیلی کام اتھارٹی رابطے میں ہے

Comments

comments